آزادکشمیر میں قومی شجر کاری مہم موسم بہار 2020کا آغاز

مظفرآباد (پی آئی ڈی)23فروری2020
وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ کسی بھی ملک کے جنگلات قدرتی ماحولیاتی نظام کی بقاء، دھرتی کے حسن میں اضافہ، زرعی و صنعتی معیشت کے استحکام اور آنے والی نسلوں کے محفوظ مستقبل کے ضامن ہوتے ہیں۔ ریاست بھر میں رواں سال شجر کاری کو کامیاب بنانے کے لیے خصوصی اقدامات کیے جائیں۔جہلم ویلی اور نیلم ویلی کی مرکزی شاہرات کے دونوں اطراف زیادہ سے زیادہ شجر کاری کریں تاکہ لینڈ سلائیڈنگ میں بھی کمی آ سکے۔ پروٹیکشن کمیٹیاں بنائی جائیں تاکہ درختوں کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔ شجرکاری و شجر پروری اور جنگلات کی حفاظت کرنا صرف حکومت اور محکمہ جنگلات کی ذمہ داری ہی نہیں بنتی بلکہ یہ پوری قوم کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔جب تک ہم سب مل کر اس ذمہ داری کو نہیں نبھائیں گے کامیابی کا حصول ناممکن ہے۔ آزادخطہ کو تعمیر وترقی سے آراستہ کرنا اور اسے سرسبز و شاداب رکھنا بھی ہمارا اولین فرض ہے۔ بلین ٹری منصوبہ میں آزادکشمیر کو شامل کرنے پر وزیراعظم پاکستان اور حکومت پاکستان کے شکرگزار ہیں۔ہم نے بھی اپنے بجٹ سے شجر کاری مہم کے لیے خطیر رقم مختص کی ہے۔ محکمہ جنگلات کے لیے اس منصوبہ کی کامیابی بہت بڑا چیلنج ہے۔ جنگلات کے اصل مالک عوام ہیں۔محکمہ جنگلات اور عوام کے درمیان ایک تعلق ہونا چاہیے تاکہ جنگلا ت کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔ جنگلات ہمار ا زیور ہیں اور یہ ہمار ا حسن اور لباس ہیں۔ان خیا لات کا اظہار وزیرا عظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے قومی شجر کاری مہم موسم بہار 2020کے حوالہ سے منعقدہ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہا کہ شجر کاری مہم میں پاک آرمی، عوام الناس، وکلاء،سول سوسائٹی، صحافی حضرات، این جی اوزاور دیگر سرکاری محکمہ جات کو بھی شامل کیا جائے تاکہ زیادہ سے زیاد ہ شجر کاری ہو۔ وزیر اعظم آزادکشمیر نے محکمہ جنگلات کے حکام کو ہدایت کی کہ شجر کاری کے دوران ایندھن کے استعمال کے لیے بھی درخت لگائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری 88فیصد آبادی دیہاتوں میں رہائش پذیر ہے اور سارا دباؤ جنگلات پر ہوتا ہے اس لیے لوکل آبادی کی ایندھن کی ضروریات پوری کرنے کے لیے ایسے درخت لگائے جائیں جو جلدی تیار ہوں تاکہ لوگ انہیں ایندھن کے لیے استعمال کریں اور جنگلا ت کے کٹاؤ کو بھی روکا جا سکے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت اپنے محدود وسائل کے مطابق جنگلات کے انتظام و انصرام کے لیے کوشاں ہے اور جنگلات کی ترقی و ترویج کو اولیت دے رہی ہے اور ہر سال محکمہ جنگلات کو دستیاب وسائل سے وافر فنڈز فراہم کیے جاتے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ وقت کا تقاضہ ہے کہ ہم بحیثیت قوم جنگلات کے تحفظ اور افزائش کے لیے سرگرم عمل ہوں جس کے لیے قومی سطح پر فکر و عمل کی ضرورت ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ عہد کریں کہ ہم اپنی آئندہ نسلوں کی بقاء اور درخشاں مستقبل کے لیے ریاست کے جنگلات کی حفاظت میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ شجر کاری کی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں گے اور اپنے مستقبل کو محفو ظ سے محفوظ تر بنانے کی کوشش کریں گے۔